یاسر شاہ کو کیوں ڈراپ کیا گیا؟ ابھرتے ہوئے فاسٹ باؤلر نسیم شاہ نے وجہ بتا دی

یاسر شاہ کو کیوں ڈراپ کیا گیا؟ ابھرتے ہوئے فاسٹ باؤلر نسیم شاہ نے وجہ بتا دی

راولپنڈی (بول پاکستان رپورٹ) پاکستان کے ابھرتے ہوئے فاسٹ باؤلر نسیم شاہ پاکستان میں پہلا ٹیسٹ کھیلنے پر خاصے خوش ہیں۔ روزنامہ جنگ کے مطابق 16سالہ نسیم شاہ کہتے ہیں اپنے لوگوں کی آواز کے شور میں باؤلنگ کرانا ایک بہترین احساس تھا، جسے انہوں نے راولپنڈی ٹیسٹ کے پہلے دن بھرپور انداز میں محسوس کیا۔

یہ بھی پڑھیں: “سلام پاکستان۔۔۔” پریانکا چوپڑا کے شوہر نک جونس کا پاکستانیوں کے لیے خصوصی پیغام

نسیم شاہ نے پہلے دن 16 اوورز میں چار میڈنز اوورز کرائے، 51 رنز دیئے اور سری لنکا کے اوپنر اوشاکا فرنیڈو اور سابق کپتان اینجلو میتھیوز کو آؤٹ کیا۔ جب ان سے پہلے ٹیسٹ میں چار فاسٹ باؤلرز کو کھلانے کے فیصلے پر سوال پوچھا گیا، تو وہ بولے، اچھا فیصلہ ہے، عباس بھائی، شاہین اور عثمان کیساتھ باؤلنگ کروا کر لطف آیا۔ نسیم شاہ نے کہا کہ صبح پچ میں نمی تھی، لیکن افسوس ہم اس کا فائدہ نہ اٹھا سکے، اور پہلے سیشن میں کوئی وکٹ نہ لے سکے، البتہ کھانے کے وقفے کے بعد ہم کو اچھی گیند بازی پر وکٹیں ملیں، جو خوشی کی بات ہے۔

یہ بھی پڑھیں: وکلا نے وارڈ میں آتے ہی ثمینہ کا آکسیجن ماسک اتار پھینکا، وہ تڑپ تڑپ کر دم توڑ گئی، دردناک انکشاف

ایڈیلیڈ ٹیسٹ میں ڈراپ کرنے اور ورک لوڈ کے سوال پر نوجوان فاسٹ باؤلر نے جواب دیتے ہوئے کچھ سوچتے رہے، پھر بولے، وہ ٹیم مینجمنٹ بہتر سمجھتی ہے، مجھے کوئی مسئلہ نہیں۔ پریس کانفرنس کے دوران جب ان سے 37 ٹیسٹ میں 207 وکٹ لینے والے تجربہ کار سپنر یاسر شاہ کے بارے میں سوال پوچھا گیا، تو کہنے لگے، یاسر بھائی بہترین باؤلر ہیں، انہیں راولپنڈی میں کھلانے کا فیصلہ درست ہے یا غلط، اس بارے میں ٹیم مینجمنٹ بہتر جانتی ہے، کیونکہ کس کو کھلانا ہے اور کسے ڈراپ کرنا ہے اس بارے میں مجھے نہیں معلوم ہوتا، لہٰذا میں یہی کہوں گا، یاسر بھائی کو نہ کھلانے کا فیصلہ ٹیم مینجمنٹ کا ہے اور وہ بہتر سمجھتے ہیں کہ ایسا کیوں کیا؟ یہ تو وہی بتا سکتے ہیں، مجھے اس سے زیادہ کچھ معلوم نہیں ہے۔

یہ بھی پڑھیں: کرتارپور راہداری کے راستے پاکستان پہنچ کر پاکستانی بوائے فرینڈ کے ساتھ فیصل آباد جانے والی سکھ لڑکی، حقیقت سامنے آ گئی

اپنا تبصرہ بھیجیں