ٹک ٹاک پر دوستی، لاہور میں‌ 3 اوباشوں نے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

کورونا وارڈ میں‌ ڈیوٹی پر موجود نرس کو ڈاکٹر نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

نئی دہلی (بول پاکستان رپورٹ) بھارت میں کورونا وارڈ میں ڈیوٹی کے فرائض سرانجام دیتی نرس کو ایک ڈاکٹر نے جنسی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ ٹائمز آ ف انڈیا کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست ہریانہ کے ضلع پنچکولہ میں پیش آیا ہے جہاں ڈاکٹر نے 11 اور 12 جولائی کی درمیانی رات نشہ دے کر نرس کے ساتھ یہ شیطانی حرکت کی۔

یہ بھی پڑھیں: مناہل ملک کے بعد ٹک ٹاک سٹار ثناء شیخ‌ کی برہنہ تصاویر بھی لیک ہو گئیں

نرس کو ہوش میں آنے کے بعد احساس ہوا کہ اس کے ساتھ کیا درندگی ہو چکی ہے جس پر اس نے ڈاکٹر کے خلاف ہسپتال انتظامیہ کو شکایت کر دی۔ انتظامیہ نے ڈاکٹر کے خلاف تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ اسی دوران گزشتہ روز ملزم ڈاکٹر تحقیقاتی کمیٹی کے سامنے اپنا بیان ریکارڈ کرانے کے بعد جب اپنے کمرے میں گیا تو ہسپتال کی نرسوں نے جمع ہو کر اس پر دھاوا بول دیا۔

یہ بھی پڑھیں: جنت مرزا کی فحش تصاویر لیک ہونے کا معاملہ، ٹک ٹاک سٹار خود سامنے آ گئی

رپورٹ کے مطابق نرسوں نے اس ڈاکٹر کی خوب درگت بنائی۔ جب نرسوں کی طرف سے کیا جانے والا ہنگامہ بڑھا تو پولیس بلا لی گئی جس نے آ کر ملزم ڈاکٹر کی جان بچائی۔ ہسپتال کے کورونا وارڈ میں ہی ڈیوٹی کرنے والے ایک اور ڈاکٹر نے بتایا ہے کہ “ڈیوٹی ڈاکٹر رات کو 9 بجے راؤنڈ لگاتا ہے اور پھر دوسرے راؤنڈ کے لیے وہ اگلی صبح ہی وارڈ میں جاتا ہے لیکن ملزم ڈاکٹر اس رات آدھی رات کو بھی وارڈ میں گیا تھا جس سے معاملہ مشکوک ہو جاتا ہے۔”

یہ بھی پڑھیں: ٹک ٹاک پر دوستی، لاہور میں‌ 3 اوباشوں نے لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

اپنا تبصرہ بھیجیں