پراسرار بازیابی کے بعد دعا منگی نے حکومت سندھ سے ایک چیز مانگ لی، سکیورٹی نہیں بلکہ۔۔۔

پراسرار بازیابی کے بعد دعا منگی نے حکومت سندھ سے ایک چیز مانگ لی، سکیورٹی نہیں بلکہ۔۔۔

کراچی (بول پاکستان رپورٹ) کراچی کے علاقے ڈیفنس سے اغواء ہونے والی لڑکی دعا منگی کی پراسرار بازیابی کے بعد اس معاملے میں ایک نئی پیشرفت ہوئی ہے، نجی ٹی وی چینل بول نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ دعا منگی اور ان کے والد نے مطالبہ کر دیا ہے کہ دعا کی بازیابی کے لیے تاوان کے طور پر اغواء کاروں کو دی گئی رقم حکومت سندھ انہیں واپس کرے۔

یہ بھی پڑھیں:‌ اگر بھارت میں احتجاج آئندہ ہفتے تک جاری رہا تو کشمیر میں… بھارتی سکالر نے ہی مودی سرکار کی مذموم منصوبہ بندی کا بھانڈہ پھوڑ دیا

نجی ٹی چینل کے مطابق 20 سالہ لاء سٹوڈنٹ دعا نثار منگی کے خاندانی ذرائع نے بتایا ہے کہ دعا منگی نے اپنی تعلیم امریکہ میں حاصل کرنی تھی جس کے لیے اس کے والدین نے یہ رقم جمع کر رکھی تھی جو اغواء کاروں کو بطور تاوان دینی پڑ گئی۔ اب وہ بالکل خالی ہاتھ ہو چکے ہیں اور انہوں نے حکومت سندھ سے تاوان کی رقم واپس ادا کرنے کا مطالبہ کر دیا ہے تاکہ دعا منگی امریکہ میں تعلیم حاصل کر سکے۔ نجی ٹی وی چینل دنیا نیوز کے مطابق دعا منگی کے والدین نے اغواء‌ کاروں کو 20 لاکھ روپے تاوان ادا کیا.

یہ بھی پڑھیں:‌ لاہور میں‌ماڈلز اور اداکاراؤں کی برہنہ تصاویر اور ویڈیوز بنائے جانے کا انکشاف

ذرائع کا کہنا ہے کہ رقم حکومت سندھ سے واپس دعا منگی اور ان کے گھر والوں کو دلوانے میں حکومت سندھ کی کچھ شخصیات بھی کوشش کر رہی ہیں۔ یا د رہے کہ کراچی کے علا قت ڈیفنس سے اغوا ہونے والی دعا منگی کے کیس میں اغواکاروں کی گولی سے زخمی ہونے والے نواجوان حارث کے جسم سے گولی بھی نکال لی گئی ہے۔طویل آپریشن کے بعد حارث کے جسم سے گولی نکالی گئی جو کہ دعا منگی کے اغوا کے وقت گولی لگنے سے زخمی ہو گیا تھا۔حارث کے والد کا کہنا ہے کہ ڈاکٹرز نے حارث کے جسم سے گولی نکال تو لی ہے لیکن افسوس ناک خبر بھی سنائی ہے کہ حارث کا نچلا حصہ متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔دوسری جانب حارث کے والد نے مزید کہا کہ میرا بیٹا اب زندگی بھر اپنے پیروں پر کھڑا نہیں ہو سکے گا۔

یہ بھی پڑھیں:‌ اداکارہ نور کی 5 ویں خفیہ شادی کا معاملہ، اداکارہ خود میدان میں‌آ گئیں

اپنا تبصرہ بھیجیں