حکومت کا موٹرسائیکل اور رکشے پر ود ہولڈنگ ٹیکس لگانے کا فیصلہ

حکومت کا موٹر سائیکل اور رکشے پر ود ہولڈنگ ٹیکس لگانے کا فیصلہ، رجسٹریشن فیس کتنی بڑھ جائے گی؟ سن کر ہی پاکستانیوں کے ہوش اڑ جائیں

کراچی(بول پاکستان رپورٹ)پہلے ہی نئے ٹیکسز کی بھرمار نے عوام کا بھرکس نکال کر رکھ دیا تھا اور اب تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے موٹر سائیکل اور رکشے پر بھی ود ہولڈنگ ٹیکس عائد کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ جس کے بعد موٹر سائیکل کی رجسٹریشن فیس ہی اتنی بڑھ جائے گی کہ غریب آدمی اس کا سوچ بھی نہیں سکے گا۔

یہ بھی پڑھیں: “سرفراز کو کپتانی سے ہٹا کر اس کی جگہ…” شعیب اختر نے نئے کپتان کے لیے حیران کن نام دے دیا

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) نے محکمہ ایکسائز سندھ کو ٹیکس وصولی کے لیے ایک خط لکھا ہے جس میں موٹرسائیکل اور رکشے پر ودہولڈنگ ٹیکس عائد کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اس ٹیکس کے نفاذ سے موٹر سائیکل کی رجسٹریشن فیس میں 17ہزار روپے کا اضافہ ہو جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں: “شادی کے دوسرے روز میری بہن روتی ہوئی گئی کیونکہ محسن نے…” فاطمہ سہیل نے محسن عباس حیدر پر نیا الزام لگا دیا

ایف بی آر کی طرف سے لکھے گئے خط میں کہا گیا ہے کہ “اس وقت موٹر سائیکل کی رجسٹریشن فیس 3400 روپے ہے جو ود ہولڈنگ ٹیکس کے بعد 20 ہزار 900 روپے ہو جائے گی۔ خط کے مطابق ودہولڈنگ ٹیکس عائد ہونے کے بعد رکشے کی رجسٹریشن فیس میں 7 ہزار روپے کا اضافہ ہو گا اور 3100 روپے سے بڑھ کر 10 ہزار 750 روپے تک چلی جائے گی۔ واضح رہے کہ کراچی کے لیے ایف بی آر نے جائیدادوں کی نئی قیمت کا تعین بھی کر دیا ہے جس کے تحت جائیدادوں کی قیمت میں 66 فیصد تک اضافہ کر دیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں: پٹرول کتنا سستا ہونے جا رہا ہے؟‌ خوشخبری کو ترستے پاکستانیوں کے لیے اچھی خبر آ گئی

اپنا تبصرہ بھیجیں